Classics – 9 [Shab-e-aarzoo ka aalam]

یہ جفائے غم کا چارہ، وہ نِجات دل کا عالم
ترا حُسن دستِ عیسٰی، تری یاد رُوئے مریم

دل و جاں فدائے راہے کبھی آ کے دیکھ ہمدم
سرِ کُوئے دل فِگاراں شبِ آرزو کا عالم

تری دِید سے سِوا ہے ترے شوق میں بہاراں
وہ چمن جہاں گِری ہے تری گیسوؤں کی شبنم

یہ عجب قیامتیں ہیں تری رہگزر میں گزراں
نہ ہُوا کہ مَر مِٹیں ہم ، نہ ہُوا کہ جی اُٹھیں ہم

 

[Faiz Ahmed Faiz]

Advertisements

One thought on “Classics – 9 [Shab-e-aarzoo ka aalam]

  1. Faiz often uses symbolism , I could not understand meaning of these lines
    but diction and rhyming balance is beautiful , really Faizish !

    2016-02-13 18:07 GMT-05:00 Madd o Jazar :

    > Umer posted: ” یہ جفائے غم کا چارہ، وہ نِجات دل کا عالم ترا حُسن دستِ
    > عیسٰی، تری یاد رُوئے مریم دل و جاں فدائے راہے کبھی آ کے دیکھ ہمدم سرِ کُوئے
    > دل فِگاراں شبِ آرزو کا عالم تری دِید سے سِوا ہے ترے شوق میں بہاراں وہ چمن
    > جہاں گِری ہے تری گیسوؤں کی شبنم یہ عجب قیامتیں ہی”
    >

    Like

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s