Dialogue – 47 (“Ji…”)

“Ji chaahta hai, sub kuch tabaah o barbaad kar doon…”

“kyoun…?..”

“look at my sufferings……look at me…… I want to ruin everything….”

“ok…ok…….go ahead…”

“but can’t…”

“kyoun…?…”

Ji ki uss waqt bhi suni thee……..tau ye din dekhna parra…..ab nahin sun’ni….”

🙂

Advertisements

8 thoughts on “Dialogue – 47 (“Ji…”)

  1. فیصلہ کرنے کے لمحے میں ہمیشہ اپنے دل کی آواز سنو۔ اکثر بہت اہم فیصلے ہمیں بہت عجلت میں اور فوراً کرنے پڑ جاتے ہیں۔ جب بھی کوئی اہم فیصلہ درپیش ہو تو ہمارے دل اور دماغ میں جنگ سی چھڑ جاتی ہے۔ دل کچھ کہتا ہے اور دماغ کچھ اور۔ ایسے میں جو سب سے پہلی سوچ دل میں ابھرے اس پر عمل کرنا چاہیے۔ دماغ انسان کو اندیشوں میں مبتلا کر کے بزدلانہ فیصلے کروانا چاہتا ہے جبکہ دل حوصلے اور جرات کا سبق سکھاتا ہے جو صحیح ہے وہ کرنے کو کہتا ہے۔

    (فرحت اشتیاق کے ناول ’’دیارِ دل‘‘ سے اقتباس)

    اب کریں تو کیا کریں؟؟

    Liked by 2 people

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s