Self-Description 63

پت جھڑ کی دہلیز پہ رکّھے  ، بے چہرہ پتّوں کی صُورت

ہم کو ساتھ  لئے پھرتی ہے تیرے دھیان کی تیز ہوا

Advertisements

Self-Description 62

کہیں میں دیر سے جاؤں تو یاد آتا ہے

کہیں میں وقت سے پہلے بھی جایا کرتا تھا

Self-Description 61

میرے الفاظ ہی چہرہ ہیں میرے پردے کا
میں ہوں خاموش جہاں، مجھ کو وہیں سے سُنیئے

Self-Description 60

کچھ اُس کو بھی پسند تھے اپنے سبھی اصول

کچھ ہم بھی اتّفاق سے ضِد کے مریض تھے

Self-Description 59

جب تیرا حکم مِلا، ترک محبت کر دی
دِل مگر اس پہ وہ دھڑکا، کہ قیامت کر دی

تُجھ کو پوجا ہے کہ اصنام پرستی کی ہے
میں نے وحدت کے مفاہیم کی کژت کر دی

مجھ کو دشمن کے ارادوں پہ پیار آتا ہے
تیری اُلفت نے محبت میری عادت کر دی

 

احمد ندیم قاسمی

Self-Description 58

دونوں مرے وجود میں رہتے ہیں ایک ساتھ

بیزار ایک شخص ھے ___ بیدار ایک اور

 

Self-Description 57

اپنی دُھن میں رہتا ہوں

میں بھی تیرے جیسا ہوں